ویڈیو گیم کی نقل، کمسن بچوں نے چھت سے چھلانگ لگا دی

پاکستان

بیجنگ: چین میں کمسن بچوں نے ویڈیو گیم کی نقل کرتے ہوئے چھت سے چھلانگ لادی، ویڈیو گیم میں مذکورہ کردار بھی چھت سے چھلانگ لگاتا ہے اور بچ جاتا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق چینی دارالحکومت بیجنگ میں 9 اور 11 سالہ دو بہن بھائی ویڈیو گیم کھیلتے ہوئے اپنی بلڈنگ کی چھت سے نیچے کود گئے، دونوں بچوں کو شدید زخمی حالت میں اسپتال منتقل کردیا گیا۔

چینی میڈیا کے مطابق گیم کے دوران چھوٹی بہن نے بھائی سے کہا کہ ’’اگر ہم چھلانگ لگائیں تو ہمیں بھی کچھ نہیں ہوگا اور دوبارہ زندہ ہوجائیں گے۔‘‘

Siblings addicted to video game during lockdown jump off building

اس کے بعد دونوں بہن بھائیوں نے آنکھیں بند کرکے ایک ساتھ چھت سے چھلانگ لگائی جس کے بعد دونوں شدید زخمی ہوکر بیہوش ہوگئے۔

بچوں کے والدین کا کہنا ہے کہ اس گیم میں جیسے کردار عمارتوں سے گرتے ہیں اور دوبارہ زندہ ہوجاتے ہیں، دونوں بچے لاک ڈاؤن کی وجہ سے روزانہ اپنا زیادہ تر وقت گیم کھیلنے میں صرف کررہے تھے جس کا ان پر اتنا اثر ہوا کہ انہوں نے گیم کے کرداروں کو حقیقی سمجھ لیا اور 50 فٹ کی بلندی سے کود گئے۔

Siblings addicted to video game during lockdown jump off building

والدین نے مزید کہا کہ ان کے بچے نارمل تھے اور وہ گیم کے عادی ہوچکے تھے جس کے سبب وہ اس خطرناک اور جان لیوا تجربے پر مجبور ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق بچوں کے والدین نے چینی گیم کمپنی پر مقدمہ کردیا جبکہ کمپنی نے واقعے کی ذمہ داری لینے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ یہ ہمارا گیم نہیں ہے۔

fb-share-icon0

Tweet
20

Comments

comments




Source link

اسی بارے میں مزید خبریں

Menu