کنگنا رناوت جیا بچن پر برس پڑیں

شوبز

بھارتی اداکارہ کنگنا رناوت سماج وادی پارٹی کی رکن پارلیمنٹ اور لیجنڈری اداکار امیتابھ بچن کی اہلیہ جیا بچن پر اپنے خلاف بیان دینے پر برس پڑیں۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق رکن پارلیمنٹ جیا بچن نے لوک سبھا میں کنگنا رناوت کے خلاف بیان دے ڈالا تھا۔

اس بیان پر ردِ عمل دیتے ہوئے کنگنا رناوت نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک بیان داغ دیا۔

اس بیان میں کنگنا نے جیا بچن کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ’جیا جی! کیا آپ اس وقت بھی ایسا ہی بیان دیتیں جب میری جگہ پر آپ کی بیٹی شویتا کو مارا پیٹا جاتا، گھسیٹا جاتا اور اس کی بے حرمتی کی جاتی؟‘

انھوں نے یہ بھی کہا کہ ’کیا آپ تب بھی یہی کہتیں اگر ابھیشیک مسلسل اپنے خلاف غنڈہ گردی اور ہراساں کرنے کی شکایت کرتے رہتے اور ایک دن خود کو پھانسی لگائے ہوئے ملتے؟‘

اپنے پیغام کے اختتام پر کنگنا رناؤت نے کہا کہ آپ ہمارے کے لیے بھی ہمدردی کا اظہار کریں۔

واضح رہے کہ حال ہی میں بھارتی ریاست مہاراشٹرا کے دارالحکومت ممبئی کی میونسپل کارپویشن (بی ایم سی) نے بالی ووڈ اسٹار اداکارہ کنگنا رناوت کے آفس کو تجاوزات قرار دے کر اسے توڑ دیا تھا۔

اس سے متعلق کنگنا رناوت نے بھارتی ریاست مہاراشٹرا کے وزیراعلیٰ اُدھو ٹھاکرے کو مخاطب کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’میرے گھر کی طرح تمہاری انا بھی ٹوٹے گی۔‘

انھوں نے ہدایت کار کرن جوہر اور اُدھو ٹھاکرے کو بے نقاب کرنے کا بھی اعلان کیا تھا جس کے بعد اداکارہ کے خلاف ممبئی میں مقدمہ درج کروادیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ کنگنا رناوت فلم انڈسٹری میں اقرباپروری کے خلاف آواز بلند کرنے والوں میں شامل ہیں، جبکہ انھوں نے اس انڈسٹری کو ’گٹر‘ سے تشبیہ دیدی تھی۔

اسی بیان سے متعلق راجیا سبھا میں خطاب کرتے ہوئے جیا بچن نے کہا تھا کہ شوبز انڈسٹری کے کچھ لوگوں کو سوشل میڈیا پر مار پڑ رہی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ایسے لوگ جنھوں نے اس انڈسٹری سے نام بنایا، وہ اسے ہی گٹر کہہ رہے ہیں۔

کنگنا رناؤت کے بیان کو مسترد کرتے ہوئے جیا بچن کا کہنا تھا کہ میرا ایسے بیان سے مکمل اختلاف ہے، مجھے امید ہے کہ حکومت ایسے لوگوں کو بتائے گی کہ وہ اس طرح کی زبان استعمال نہ کریں۔

واضح رہے کہ کنگنا رناوت نے یہ بھی دعویٰ کیا تھا شوبز انڈسٹری میں کام کرنے والے 99 فیصد لوگ ڈرگز استعمال کرتے ہیں۔




Source link

اسی بارے میں مزید خبریں

Menu