بارہمولہ ضلع کے دور دراز علاقے میں 17 برس بعد موبائل خدمات بحال، لوگوں میں خوشی کی لہر– Urdu News

بھارت

ضلع بارہمولہ کے سوپور قصبہ کے دور دراز علاقہ رام پورہ راج پورہ میں 17 برس بعد موبائل خدمات بحال کی گئیں جس سے مقامی لوگوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔ سوپور قصبے سے 25 کلومیٹر کی دوری پر واقع اس دور افتادہ علاقے میں ریلائنس جیو کمپنی نے موبائل خدمات فراہم کرکے لوگوں کی دیرینہ مانگ کو پورا کردیا۔

بارہمولہ ضلع کے دور دراز علاقے میں 17 برس بعد موبائل خدمات بحال، لوگوں میں خوشی کی لہر

بارہمولہ ضلع کے دور دراز علاقے میں 17 برس بعد موبائل خدمات بحال، لوگوں میں خوشی کی لہر

بارہمولہ۔ ضلع بارہمولہ کے سوپور قصبہ کے دور دراز علاقہ رام پورہ راج پورہ میں 17 برس بعد موبائل خدمات بحال کی گئیں جس سے مقامی لوگوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔ سوپور قصبے سے 25 کلومیٹر کی دوری پر واقع اس دور افتادہ علاقے  میں ریلائنس جیو کمپنی نے موبائل خدمات فراہم کرکے لوگوں کی دیرینہ مانگ کو پورا کردیا۔

واضح رہے کہ جموں کشمیر میں 2003 میں موبائل خدمات شروع کی گئی تھیں اور اس گاؤں میں 17 سال بعد ان خدمات کو شروع کیا گیا جس سے لوگوں کو کافی سہولت مل رہی ہے۔ رام پورہ اور راج پورہ کے گرد ونواح علاقوں میں ابھی تک کمیونیکیشن کا کوئی ذریعہ نہیں تھا اور موبائل سروسز نہ ہونے کی وجہ سے ان لوگوں کو کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا تھا۔ علاقے کے ایک معمر شخص علی محمد لون کا کہنا ہے کہ اس دور جدید میں بھی یہاں کے لوگ موبائل سروسز سے محروم تھے جس کے چلتے انہیں طرح طرح کی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا تھا۔ ان کا مزید کہنا ہے کہ علاقے میں موبائل سہولیات کو شروع کرانے کیلئے انہوں نے آج تک کافی جد وجہد کی اور سرکاری اور نجی کمپنیوں کو اسضمن میں کئی بار عرضیاں بھی دی گئیں لیکن بالآخر 17 برس کے طویل انتظار کے بعد جیو کمپنی نےانہیں باقی دنیا سے جوڑ دیا۔

علاقے میں موبائل اور انٹرنیٹ کی سہولت کے نہ ہونے سے عام لوگوں کے ساتھ ساتھ یہاں کے طلبا کو بھی شدید مشکلات سے دوچار ہونا پڑتا تھا۔ گاوں کے ایک طالب علم عبدالمنان کا کہنا ہے کہ آج کل کے دور میں جہاں انٹرنیٹ کے بغیر زندگی کا تصور بھی نہیں کیا جا سکتا انہیں نہ جانے کیوں اس بنیادی سہولت سے  آج تک محروم رکھا گیا۔ ان کا مزید کہنا ہے کہ ہم جیسے کئی طلبا و طالبات کو انٹرنیٹ سہولت  سے استفادہ کرنے کے لیے میلوں کا سفر طے کرنا پڑتا تھا اور بعض اوقات وہ مختلف امتحانات کی جانکاری اور ضروری انفارمیشن حاصل کرنے سے محروم وہ جایا کرتے تھے۔

یہاں کے لوگوں نے ریلائنس جیو کمپنی کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ موبائل ٹیلیفون اور انٹرنیٹ سے جڑ جانے سے نہ صرف اس پچھڑے علاقے میں ترقی ممکن ہو سکے گی بلکہ تعلیم حاصل کرنے والے بچوں کو بھی اس سے کافی فائدہ ہوگا۔


Source link

اسی بارے میں مزید خبریں

Menu