بنگال: ”بی جے پی کے پانچ سے چھ ارکان پارلیمنٹ ترنمول میں ہو سکتے ہیں شامل”– Urdu News

بنگال میں امسال اسمبلی الیکشن ہونے ہیں۔ اسمبلی الیکشن کے لئے ایک جانب جہاں ترنمول کانگریس تیسری بار اقتدار حاصل کرنے کی تیاریوں میں ہے تو وہیں بی جے پی بھی بنگال میں اقتدار کی کرسی اپنے نام کرنا چاہتی ہے۔

بنگال: ''بی جے پی کے پانچ سے چھ ارکان پارلیمنٹ ترنمول میں ہو سکتے ہیں شامل''

وزیر اعلی ممتا بنرجی کی فائل فوٹو

کولکاتہ۔ بنگال میں جاری سیاسی گھمسان کے بیچ سب کی نظریں ترنمول سے بی جے پی میں شامل ہو رہے لیڈران پر ٹکی ہیں۔ بنگال میں امسال اسمبلی الیکشن ہونے ہیں۔ اسمبلی الیکشن کے لئے ایک جانب جہاں ترنمول کانگریس تیسری بار اقتدار حاصل کرنے کی تیاریوں میں ہے تو وہیں بی جے پی بھی بنگال میں اقتدار کی کرسی اپنے نام کرنا چاہتی ہے۔

بی جے پی پارٹی میں شامل ہو رہے نئے لیڈران کا خیرمقدم کر رہی ہے تو وہیں ترنمول لیڈران کے بی جے پی میں شامل ہونے سے پارٹی کو مضبوطی ملنے کا بھی دعویٰ کیا جارہا ہے۔ وہیں ممتا بنرجی کا ساتھ چھوڑ کر جا رہے لیڈران سے ترنمول کے کمزور پڑنے کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔ کمزور پڑتی پارٹی کو طاقت بخشنے کے لئے ترنمول کانگریس نے بی جے پی کے لیڈران سے سیاسی خلا کو پر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ریاستی وزیر جیوتی پریہ ملک نے دعویٰ کیا ہے کہ بی جے پی کے پانچ سے چھ ایم پی ترنمول میں شامل ہو سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جلد ہی بی جے پی میں بھگڈر مچنے والا ہے جس سے ترنمول کانگریس کو فائدہ ہوگا۔ ترنمول کانگریس بی جے پی لیڈران کو اپنی پارٹی میں شامل کرانے کی تیاریاں کر رہی ہے۔ ترنمول لیڈران نے دعویٰ کیا ہے کہ ممتا بنرجی کی سیاسی تیاریوں کے آگے بی جے پی کے تمام تر اقدامات ناکام ثابت ہوں گے۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے بھی اے آئی ایم آئی ایم کی جانب سے بنگال اسمبلی الیکشن میں شامل ہونے کے اعلان کے بعد ایم آئی ایم کے کئی مقامی لیڈران کو ترنمو ل کانگریس میں شامل کرایا گیا ہے۔


Source link

مینو